آمدنی سے زیادہ جائیداد: مایاوتی کے بھائی آنندکی گرفتاری کا امکان

نئی دہلی، 22۔ ستمبر،ہ س:
بہوجن پارٹی کی قومی صدر مایاوتی کے دو سگے بھائیوں میں سے ایک آنند کمار کی آمدنی سے زیادہ جائیداد اور متعدد فرضی کمپنیوں کے معاملے میں سی بی آئی کی جانب سے گرفتاری کا امکان بڑھتاجا رہا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اس سے مایاوتی پریشان ہیں۔ انہیں لگنے لگا ہے کہ سی بی آئی ان کے بھائی کو گرفتار کر سکتی ہے۔ اس کے بعد لوک سبھا انتخابات کے پہلے ان سے (مایاوتی) بھی پوچھ گچھ ہو سکتی ہے۔ ذرائع کے مطابق اس کی وجہ یہ ہے کہ آنند کمار پر 18 ستمبر 2018 کی طرف سے سی بی آئی کا دباو بہت بڑھ گیا ہے۔انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) اور انکم ٹیکس نے بھی بھائی بہن کی دولت سے متعلق فائل تیار کر رکھی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ سی بی آئی کے خوف سے ہی مایاوتی نے 20 ستمبر 2018 کو اجیت جوگی کی پارٹی جنتاکانگریس (چھتیس گڑھ) سے بی ایس پی کے انتخابی اتحاد کا اعلان کیا۔ اس کے علاوہ مدھیہ پردیش کی 230 سیٹوں میں 22 سیٹوں پر اپنے امیدواروں کی فہرست جاری کروائی۔مایاوتی کے بھائی آنند کمارلپک تھے، لیکن اسی آنند کمار کی املاک 2007 میں 07.5 کروڑ روپے تھی، جو 2014 میں بڑھ کر ایک ہزارتین سو سولہ کروڑ کی ہوگئی۔ اس دوران 2007 سے 2012 تک اتر پردیش میں مایاوتی وزیر اعلی تھیں۔ مایاوتی نے اپنے اس بھائی کو اپریل 2017 میں بی ایس پی کا نائب صدر بنایا تھا، لیکن 27 مئی 2018 کو عہدے سے ہٹا دیا۔ مایاوتی کے وزیر اعلی رہنے کے دوران آنند کمار پر فرضی کمپنیاں بنا کر اسکے ذریعہ کالا دھن سفید کرنے ان کمپنیوں کے نام پر کروڑوں روپے قرض لینے اور اسسےپراپرٹی میں سرمایہ کاری کر کے پیسہ کمانے کا الزام لگا ہے۔ اس کے لئے اکرتی ہوٹل پرائیویٹ لمیٹڈ نام کی کمپنیبنائی گئی، جس مین آنند کمار بڑے پارٹنر رہے۔دہلی سے چلائی جانے والی اس کمپنی کے تین ڈائریکٹر اور 37 شراکت دار ہیں، لیکن تعجب کی بات یہ ہے کہ ان میں سے کئی پارٹنر کمپنیاں صرف کاغذ پر ہیں، جن کے نام ڈےلٹن ایگزم پرائیویٹ لمیٹڈ، بھاسکر فنڈ مینجمنٹ لمیٹڈ، گنگا بلڈرس لمیٹڈ،کلفٹن پیئرسن ایکسپورٹ اینڈ ایجنسی ہیں۔ ان کمپنیوں کے پاس اکرتی ہوٹل کے500,150 شیئر ہیں۔ ان میں تین کمپنیوں کا پتہ ایک ہی لکھا ہے۔ وہ کولکاتا کےمہیش تلاکا ہے۔ ان کے ڈائریکٹر بھی ایک ہی ہیں۔ ایک ٹی وی چینل نے جب اس کی جانچ کی تو پایا کہ اس نام کی کسی کمپنی کا وہاں کبھی کوئی دفتر ہی نہیں تھا۔اکرتی ہوٹل کی ایک اور پارٹنر کمپنیناولٹی ٹریڈر گوہاٹی کےہری بول مارکیٹ کے ایڈریس پر رجسٹرڈ ہےلیکن یہ پتہ بھی فرضی ہے۔ اسی طرح سات اور جعلی کمپنیاں ہیں جن کے شیئر زاکرتی ہوٹل میں ہیں۔اس معاملے میں مایاوتی اور ملائم راج میں ہوئے کئی ہزار کروڑ روپے کے اناج گھوٹالے کی جانچ کے لئے عدالت میں مفاد عامہ کی عرضی دائر کرنے والے وکیل وشوناتھ چترویدی کا کہنا ہے کہ سی بی آئی، انکم ٹیکس اور ای ڈی کے خوف سے مایاوتی اور ملائم ایسا کچھ بھی نہیںکریں گے جس سے مرکزی حکومت (چاہے جس بھی حکومت ہو، بی جے پی کی ہو یا کانگریس کی) ناراض ہوجائے۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ

رابطہ:aakashtimes0@gmail.com