بنگلہ دیشی مسلمانوں کو ملک میں رہنے کا حق نہیں:دلیپ گھوش

کولکاتہ،یکم اگست،ہ س:آسام میں پیر کو جاری ہوئی این آر سی لسٹ پر ریاستی بی جے پی صدر دلیپ گھوش نے ایک بار پھر وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی پر جوابی حملہ کیا ہے ۔ ساتھ ہی انہوں نے مغربی بنگال کے اقتدار میں آنے پر یہاں بھی این آر سی کی لسٹ جاری کرنے کے عہد کا اظہار کیا ہے ۔گھوش نے بدھ کو کہاکہ یو پی اے کے اقتدار میں سپریم کورٹ کی ہدایت کوتسلیم کرتے ہوئے این آر سی کا عمل شروع کیا گیا تھا۔ موجودہ بی جے پی کی اقتدار والی این ڈی اے سرکار نے اسے مکمل شکل دیا ہے لیکن کچھ لوگ اپنے آپ کو آئین اور قانون سے اوپر سمجھتے ہیں۔ دلیپ گھوش نے دعویٰ کیا کہ تقسیم کے وقت ہوئے آئین کے مطابق بنگلہ زبان کے ہندووں کو بھارت کے کسی بھی کونے میں آنے اور رہنے کا حق ہے لیکن مسلم در انداز اس ملک میں سازش کے تحت آ رہے ہیں ۔ یہ خطرے کا اشارہ ہیں ۔ یہ لوگ کئی طرح سے مجرمانہ وارداتوں میں شامل رہتے ہیں ۔ دہشت گردی سے لے کر چوری ڈاکہ زنی قتل لوٹ اور دیگر وارداتوں میں کولکاتہ سے لے کر ریاست بھر میںبنگلہ دیشی گرفتار ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش سے غیر قانونی در انداز مغربی بنگال کے راستے پورے ملک میں پھیل رہے ہیں۔اسے دیکھتے ہوئے مغربی بنگال کے اقتدار میں آنے کے فوری بعد بی جے پی این آر سی کارروائی شروع کرے گی ۔ بنگلہ دیش سے آنے والے یہ غیر قانونی در اندازی نہ صرف ہمارے سماجی،اقتصادی ڈھانچے کو بگاڑ رہے ہیں بلکہ ریاست اور ملک کی سیکورٹی کے لئے خطرہ بھی بن رہے ہیں ۔ انہیں بغیر کسی تاخیر کئے ملک سے باہر بھگا دینا چاہئے ۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ