لالو یادو کی عبوری ضمانت میں 6ہفتے کااضافہ

r j d lalu yadav

رانچی،29۔جون ،ہ س:جھارکھنڈ ہائی کورٹ نے چارہ گھوٹالہ کے تینوں معاملے میں سزایافتہ لالو پرساد یادو کی عبوری ضمانت کی مدت جمعہ کو06ہفتے کے لئے پھر سے بڑھا دی ہے۔ بہار کے سابق وزیر اعلی اور آر جے ڈی سپریمو لالو پرساد یادو اب 17 اگست تک ضمانت پر باہر رہیں گے۔ہائی کورٹ کی جسٹس اپریش کمار سنگھ کی یک رکنی بنچ نے راشٹریہ جنتادل سربراہ کی عرضی پر سماعت کی اور صحت کی بنیاد پر دی گئی ان کی عرضی کو منظور کرلیا۔ اس سے پہلے22جون کو جھارکھنڈ ہائی کورٹ کے کارگزار چیف جسٹس ڈی این پٹیل کی عدالت نے بہار کے سابق وزیراعلیٰ کی ضمانت کی مدت 3جولائی تک بڑھا دی تھی۔کئی طرح کی بیماریوں سے پریشان لالو یادو کو11مئی2018کو جھارکھنڈ ہائی کورٹ نے6ہفتے کی عبوری ضمانت دی تھی۔اس کے بعد لالو یادو علاج کے لئے ممبئی اور بنگلور گئے تھے۔
لالو پرساد کی جانب سے سپریم کورٹ کے سینئر وکیل ابھیشیک منو سنگھوی اور چترنجن سنہا نے جسٹس اپریش کمار سنگھ کی عدالت میں دلائل پیش کئے۔ انہوں نے میڈیکل رپورٹ پیش کرتے ہوئے لالو پرساد کیلئے تین مہینے کی ضمانت کا مطالبہ کیا ، لیکن عدالت نے اس مطالبہ کو خارج کرتے ہوئے چھ ہفتے کی ضمانت دیدی۔ عدالت نے 10 اگست کو آر جے ڈی سپریمو کی صحت سے وابستہ میڈیکل رپورٹ پھر سے پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔سی بی آئی کے وکیل راجیو سنہا نے اپنا موقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ اب ریمس میں بھی لالو پرساد یادو کا علاج کیا جاسکتا ہے ، اس لئے ضمانت کی مدت میں توسیع نہ کی جائے ، لیکن عدالت نے اس دلیل کو خارج کردیا۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ