مراٹھا ریزرویشن: جیل بھرو آندولن کےلئے آزاد میدان پرمراٹھوں کی بھیڑ

ممبئی،یکم اگست،ہ س: مراٹھا ریزرویشن کے لئے مراٹھا کرانتی مورچہ کی جانب سے بدھ سے ریاستی سطح پر جیل بھر آندولن کا اعلان کیا گیا ہے ۔ اس کے تھت صبح سے ہی ممبئی میں آزاد میدان میں مراٹھا سماج کے لوگوں کی زبر دست بھیڑ جمع ہونی شروع ہو گئی ہے ۔ پولس نے بھی یہاں سیکورٹی دستے کا بندو بست کر رکھا ہے جس سے ممبئی سی ایس ٹی سے لے کر آزاد میدان تک پورا علاقہ پولس چھاونی میں تبدیل ہو گیا ہے ۔مراٹھا کرانتی مورچہ کی جانب سے ممبئی میں آزاد میدان،ٹھانے ،پربھنی ،منماڈ،نندو بار اور اندا پور میںبھی بدھ کوجیل بھرو تحریک کرنے کا فیصلہ لیا ہے ۔ ان مقامات پربھی مراٹھا سماج کیجانب سے جیل بھرو آندولن کی تیاریکی جا رہی ہے ۔ اسی طرح مراٹھا سماج کے اشتعال کو دیکھتے ہی پولس بندو بست بھی کیا جا رہاہے ۔ سکل مراٹھا مورچہ کے ریاستی کنوینر ونود پوکھرکرنے بتایا کہ مراتھا سماج کا آندولن جب تک مراٹھا مظاہرین پر درج تمام معاملے واپس نہیں لئے جائیں گے تب تک جاری رہے گا۔ اسی طرح خاتون مظاہرین پر تحریک کے دوران جن پولس والوں نے مار پیٹ کی ہے ان پر سخت کارروائی کی جانی چاہئے ۔ ریاستی سرکار کو فوری مراٹھا ریزرویشن کا اعلان کرنا چاہئے لیکن وزیر اعلیٰ اب بھی مراٹھا سماج کو تقسیم کرنے کاکام کر رہے ہیں اس لئے نو اگست تک مراٹھا سماج کی جانب سے اسی طرح ہر ضلع میں جیل بھرو تحریک کی جائے گی اور نو اگست کو ریاستی سطح پر تحریک شروع کی جائے گی۔ اسی دن تحریک کا نیا خاکہ تیار کیا جانا ہے ۔
بتا دیں کہ مراٹھا کرانتی مورچہ کیجانب سے ریاست کے 36اضلاع میں 58موک مورچے نکالے گئے تھے ۔ یہ تمام مورچے پر امن طریقے سے نکالے گئے تھے لیکن مراٹھا سماج کا اہم مطالبہ مراٹھا ریزرویشن کا فیصلہ نہ ہونے سے مراٹھا سماج نے پچھلے ہفتے سے پوری ریاست میں پر تشدد مظاہرہ شروع کیا تھا ۔ اس کا زور دار اثر پونے کے چاکن اور شولا پور میں دیکھنے کوملا ہے ۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ