مہاراشٹر بند کے دوران میں پرتشدد جھڑپیں

احمدنگر ہائی وے جام، انٹر نیٹ خدمات متاثر

ممبئی ، 24جولائی ،ہ س:مہاراشٹر کے اورنگ آباد کے کائے گاﺅں میں پیر کے روز مراٹھا کرانتی مورچہ کے کاکا صاحب شندے کے ذریعہ جل سمادھی لینے کے واقعہ کے بعد مراٹھا مظاہرین نے مہاراشٹر بند کی اپیل کی ہے۔ اس کا اثر احمد نگر، اورنگ آباد ، پنے میں دیکھنے کو مل رہا ہے۔
مراٹھا ریزرویشن کے مطالبے کو لےکر شروع ہوئی یہ تحریک اورنگ آبادمیں پرتشدد ہوتی جا رہی ہے۔ مراٹھا کرانتی مورچہ کے مظاہرین نے یہاں فائر بریگیڈکی گاڑیوں کو نظر آتش کر دیا۔ اس سے مظاہرین اور پولس کے درمیان زبردست جھڑپیں دیکھنے کو ملیں ۔بالآخر مظاہرین سے نمٹنے کے لئے پولس کو لاٹھی چارج کرنی پڑی۔ احتجاج کرنے والوں کو منتشر کرنے کے لئے پولس کو آنسو گیس کے گولے بھی داغنے پڑے۔ اس دوران منگل کے روز تین مظاہرین نے خودکشی کی کوشش بھی کی۔ اس میں سے دو اورنگ آباد کے اور ایک لاتور کا شخص شامل تھا۔ ممبئی۔ پنے شاہراہ پر گاڑیوںکو نظر آتش کئے جانے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں۔ اسی طرح احمد نگر میں گاڑیوں کی توڑ پھوڑ کے واقعات رونما ہوئے ہیں۔ مراٹھا سماج کے مشتعل مظاہرے کے پیش نظر بڑی تعداد میں پولس فورس کی تعیناتی کی گئی ہے۔ اورنگ آباد میں انٹرنیٹ خدمات نصف شب سے ہی بند کر دی گئی ہیں۔ مظاہرین کو سمجھایا جا رہا ہے۔
بیڈ ضلع میں واقع پرلی تحصیل دفتر پر مراٹھا کرانتی مورچہ کی جانب سے 18جولائی سے ہی مسلسل تحریک جاری ہے۔ یہاں مراٹھا سماج کی جانب سے مراٹھا ریزرویشن کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ اس مطالبہ کی حمایت میں پیر کے روز سے اورنگ آباد میں گنگا پور تحصیل میں کاکا صاحب شندے کی قیاد ت میں دھرنا دیا گیا تھا اور مطالبات نہ مانے جانے کی صورت میں جل سمادھی لینے کی وارننگ دی گئی تھی۔ لیکن انتظامیہ کی جانب سے اس طرف توجہ نہ دیئے جانے پر کاکاصاحب شنڈے نے گوداوری ندی میں چھلانگ لگا دی تھی۔
اس واقعہ کے ردعمل میں منگل کے روز ہی مراٹھا کرانتی مورچہ کی جانب سے مہاراشٹر بند کی اپیل کی گئی تھی۔ حالانکہ منگل کے روز پنڈھر پور سے وارکری سماج کے لوگ اپنے گھر کی جانب لوٹ رہے ہیں، اس کے پیش نظر اس تحریک کو بدھ تک منسوخ کئے جانے کا فیصلہ لیا گیا تھا لیکن مظاہرین نے منگل کی صبح سے ہی تحریک شروع کرتے ہوئے اورنگ آباد پنے روڈ جام کردیا ہے۔ تحریک کی وجہ سے مراٹھ واڑہ میں اسکو ل و کالجوں میں تعطیل کااعلان کر دیا گیا ہے۔ پنے ۔اورنگ آباد کے درمیان ایس ٹی خدمات پور ی طرح سے بند کر دی گئی ہیں۔ احمد نگر ۔ اورنگ آباد ہائی وے بھی مظاہرین نے بند کر رکھا ہے۔
اس واقعہ میں مرنے والے کاکا صاحب شندے کی لاش لینے سے ان بھائی اویناش شندے نے پیر کے روز انکا ر کر دیا تھا۔ انہوں نے خاندان کے ایک شخص کو سرکاری ملازمت دیئے جانے، اس واقعہ کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے وزیرا علیٰ کے استعفیٰ دینے اور مرنے والے کے خاندان کو 50لاکھ روپے معاوضہ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔
فی الحال اورنگ آباد کے ضلع مجسٹریٹ ادے چودھری نے مرنے والے کے اہل خانہ کو 10لاکھ روپے کی مالی مدد دیئے جانے اور خاندان کے ایک شخص کو سرکاری ملازمت دیئے جانے کی تحریری یقین دہانی شندے سے کرائی ہے۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ