وزیراعلیٰ ممتابنرجی نے دہلی فتح کا کیا اعلان

2019میں100سے150سیٹوں پر سمٹ جائے گی بی جے پی،19جنوری کو پریڈ گراو¿نڈ کے ریلی میں تمام اپوزیشن پارٹیوں کو اکٹھاکرنے کا اعلان

کولکاتہ،21جولائی ،ہ س:شہید دیوس کے اسٹیج سے وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے ہفتہ کو مرکزی حکومت، بھارتیہ جنتا پارٹی اور آرایس ایس پر زبردست حملہ بولا ہے۔ ممتا نے اسٹیج پر آتے ہی بھارتیہ جنتا پارٹی کو براہ راست نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ21جولائی کی ریلی2019میں بھارت فتح کرنی کی ریلی ہے۔ انہوںنے پارٹی کارکنوں سے اپیل کی ہے کہ آج ابھی اور اسی وقت سے کام میں لگ جائیں۔ ہمیں یہ طے کرنا ہے کہ2019میں بھارتیہ جنتا پارٹی مرکز کی حکومت میں نہ رہے۔ اس کے لئے پورے ملک کو مغربی بنگال راستہ دکھائے گا۔ ممتا نے کہا کہ19جنوری کو پریڈ گراونڈ میں پارٹی کی بڑی عوامی ریلی ہوگی۔ وہ عوامی ریلی2019 میں دہلی فتح کی ریلی ہوگی۔ ممتا نے کہا کہ اس ریلی میں پورے ملک کے اپوزیشن لیڈروں کو مدعو کروں گی اور یہیں سے مرکز کی بی جے پی حکومت کو ہٹانے کا پلان تیار ہوگا۔ حالانکہ ممتا نے یہ بھی کہا کہ یہ زمین گرودیو رویندر ناتھ ٹیگور کی زمین ہے۔ اگر کسی نے میرا ساتھ دیا تو ٹھیک اور اگر نہیں دیا تو اکیلا چلو کی پالیسی کے تحت اکیلے لڑائی لڑتی رہوں گی۔اس کے بعد ممتا بنرجی نے وزیراعظم کی ریلی میں پنڈال ٹوٹنے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جواپنی ریلی میں پنڈال نہیں سنبھال سکتے وہ ملک کیا سنبھالیں گے؟ جس طرح ان کی ریلی میں پنڈال ٹوٹ گیا اسی طرح سے ملک کو توڑ رہے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے وزیراعظم کے اس بیان کا ذکر کیا جس میں انہوں نے تریپورہ کی طرز پر بنگالہ میں اقتدار کی تبدیلی کی اپیل کی تھی۔ ممتا نے مکل رائے کا نام لئے بغیر کہا کہ تریپورہ میں آپ نہیں جیتے، میری پارٹی کے کچھ غداروں کی وجہ سے یہ حالت بنی۔ انہوں نے کہا کہ تریپورہ میں جیت کی زمین ترنمول نے تیار کی تھی اور بعد میں یہ بی جے پی کے حق میں چلی گئی۔ انہوں نے کہا کہ مغربی بنگال کی90فیصد سے زیادہ سیٹوں پر حال کے پنچایت الیکشن میں ترنمول نے جیت درج کی ہے۔ یہ لوگوں کا پیار ہے۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ اتراکھنڈ کی کئی سیٹوں پر بی جے پی بلامقابلہ منتخب ہوگئی لیکن کسی نے ان پر سوال نہیں اٹھایا۔ بنگال میں لوگ ترنمول کو بلامقابلہ جتاتے ہیںتب پورے ملک میں ہنگامہ مچنے لگتا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ پنچایت الیکشن کے بعد ترنمول کی طرف سے سروے کیا گیا تھا، جس میں پتہ چلا کہ مرشدہ باد، ندیا اور علی پور دوار کے کچھ گاو¿ں میں1000روپے میں ایک-ایک ووٹ بی جے پی نے خریدا تھا، جس کے ذریعہ کچھ سیٹوں پر قبضہ کرسکے۔ اس کے باوجود بنگال کا10کروڑ ووٹ نہیں خرید پائیں گے۔ ممتا نے اعدادوشمار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کل لوک سبھا میں بھارتیہ جنتا پارٹی 351ووٹوں سے جیتی ہے لیکن یہ اعداد وشمارایوان کے اندر کا ہے۔ باہر ان کے پاس ووٹ نہیں ہے۔ ممتا نے کہا کہ اگلے لوک سبھا الیکشن میں بھارتیہ جنتا پارٹی100 سے150سیٹوں کے درمیان سمٹ جائے گی۔ اترپردیش میں مایاوتی اور ملائم سنگھ ایک ہوگئے ہیں۔ وہاں بی جے پی کو 30سیٹیں کم ملیں گی۔ مدھیہ پردیش میں28میں سے8سیٹیں بھی نہیں ملیں گی۔ راجستھان میں 25میں سے5سیٹیں بی جے پی نہیں جیت پائے گی، گجرات، بہار، اڈیشہ، بنگال، پنجاب میں بھارتیہ جنتا پارٹی کو ایک بھی سیٹ لوک سبھا الیکشن میں ملنے والی نہیں ہے۔ اکثریت کے اعداد وشمار سے دور100 سے150سیٹوں پر وہ سمٹ جائے گی۔

تین کروڑ کسانوں کو مغربی بنگال حکومت نے دی مدد
کسانوں کی آمدنی پر اپنی حکومت کے کاموں کا حساب کتاب پیش کرتے ہوئے وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ ترنمول کی حکومت نے تین کروڑکسانوں کو اقتصادی مدد دی ہے۔ 2022میں وزیراعظم کے ذریعہ کسانوں کی آمدنی کو دوگنا کرنے پر طنز کستے ہوئے ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی کو ان کی حکومت سے سیکھنا چاہئے۔ ممتا نے کہا کہ ہم نے سات سالوں میں کسانوں کی آمدنی تین گنا کردی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سو دن کے کام، علاج، سڑک، عوامی غذائیت وغیرہ منصوبوں میں مغربی بنگال حکومت اول نمبر پر ہے۔

بی جے پی اور سنگھ کو بتایا طالبانی دہشت گرد
اس کے بعد انہوں نے بی جے پی اور آرایس ایس پر حملہ بولا۔ ممتا نے کہا کہ بی جے پی اور سنگھ کے لوگ بنگال میں طالبانی طریقے سے کام کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کل پارلیمنٹ میں وزیرداخلہ نے کہا کہ جولوگ ہندووں کو طالبان کہہ رہے ہیں وہ اپنے ریاست میں ان پر لگام لگائیں۔ تو میں پوچھتی ہوں کہ آپ اپنی پارٹی کے ریاستی صدر پر لگام کیوں نہیں لگاتے؟ ان کی زبان بہت بڑھ گئی ہے۔کبھی کہتے ہیں آگ لگا دو، پولس کو مارو، ترنمول کو مارو، جلادو، یہ طالبانی لوگ ہیں،ان پر لگام لگایئے۔

نوٹ بندی کو بتایا سب سے بڑا گھوٹالہ
ممتا نے کہا کہ مرکزی حکومت بینک لوٹ رہی ہے۔ نوٹ بندی کے نام پر سب سے بڑاگھوٹالہ کیا گیا۔ آج تک نہیں بتایا گیا کہ کتنے روپے جمع ہوئے۔2019کے الیکشن میں ملک کے عوام ان لوگوں کو سبق سکھائے گی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ15اگست کو ترنمول جھنڈا لہرائے گی اور طے کرے گی کہ2019میں لال قلعہ سے بی جے پی کا کوئی لیڈر جھنڈا نہیں لہراسکے۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ