کشمیر:میدانی علاقوں میں موسلادھار بارش سے زندگی درہم برہم

سر ینگر۔29 ،جون:محکمہ موسمیات کی جانب سے آنے والے 72گھنٹوں کے دوران موسلا دھار بارش ہونے کی پیشگوئی کے بعد پہاڑ ی علاقوں میں ہلکی برفباری ،میدانی علاقوں میں موسلا دھار بار ش سے پوری وادی میں زندگی درہم برہم ،درجہ حرات میں نہایت کمی ،ندی نالوں اور دریاو¿ں میں پانی کی سطح بلند ،بیشتر شہروں اور قصبوں کی سڑکیں جھیلوں میں تبدیل ،لوگوں کی نقل و حرکت محدود ، دریں اثناءمحکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر کی جانب سے جاری کئے گئے بیان کے مطابق آج سے موسم میں بہتری ،لوگ افواہوں پر کان نہ دھریں ،بڑے سیلاب کا کوئی خطرہ نہیں تاہم لوگ محتاط رہے ۔ذرائع ابلاغ کے مطابق وادی کے پہاڑی علاقوں میں ہلکی برفباری اور میدانی علاقوں میں موسلادھار بارش نے وادی کے اطراف و اکناف میں زندگی کو درہم برہم کر کے رکھ دیا اور لوگ اپنے گھروں تک ہی محدود ہو کر رہ گئے ۔ نمائندے کے مطابق موسلا دھار بار ش کے باعث وادی کے بڑے شہروں اور قصبوں کی سڑکیں ایک دفعہ پھر جھیلوں میں تبدیل ہو کر رہ گئی، بہتر ڈرینیج سسٹم نہ ہونے اور پانی کے بہتر نقاس کی عدم دستیابی کے باعث گاڑیوں کی آوا جاہی اور لوگوں کی نقل وحرکت پوری وادی میں متاثر ہو کر رہ گئی۔ موسلا دھار بارش کے ساتھ ہی گرمی کی شدت میں کمی ہونے کے ساتھ درجہ حرارت میں بھی کمی آئی جس کے نتیجے میں لوگوں نے سردی محسوس کی ۔نمائندے کے مطابق ندی نالوں ،دریاوں اور جھیلوں میں پانی کی سطح بلند ہونے سے سیلابی صورتحال پیدا ہو گئی۔ شہر سرینگر کے بیشتر علاقوں میں ناصاف پانی سڑکوں پر جمع ہونے کے بعد رہائشی مکانوں کی بنیادوں میں گھسنے سے لوگوں کو طرح طرح کے مشکلات کا سامنا کرناپڑا ۔نمائندے کے مطابق سرینگر شہر کے نشیبی علاقوں میں موسلا دھار بارش ہونے کے دوران پانی لوگوں کیے صحنوں اور سڑکوں پرجمع ہونے کی وجہ سے لوگوں کی نقل و حرکت بری طرح سے متاثر ہوئی۔ نمائندے کے مطابق موسلا دھار بارش کے دوران جموں سرینگر شاہراہ اور سرینگر لہہ شاہراہوں پر چٹانیں اور پسیاں گر آنے کی وجہ سے گاڑیوں کی آمدو رفت کئی گھنٹوں تک معطل ہو کر رہ گئی تاہم بارڈر روڈ آرگنائیزیشن اور آر اینڈ بی کی جانب سے سرینگر لہہ شاہراہ اور جموں سرینگر شاہراہ سے پسیاں اور چٹانیں ہٹانے کے سلسلے میں جنگی بنیادو پر اقدامات اٹھا ئے گئے اور شاہراہوں کو گاڑیوں کی آمد ورفت کے قابل بنا دیا گیا ۔ ادھر محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس کی جانب سے جاری کئے گئے بیان کے مطابق 30جون سے موسم میں بہتری آنے کے امکانات ہے ۔ بیان کے مطابق وادی میں موسلا دھار بار ش کی پہلے ہی پیشگوئی کی گئی تھی اور لوگوں کو اس بات سے خبر دار کیا گیا تھا کہ ندی نالوں ،دریاو¿ں اور جھیلوں میں پانی کی سطح بلند ہونے سے سیلابی صورتحال بھی پیدا ہو سکتا ہے ۔ محکمہ موسمیات نے پہاڑی علاقوں میں پسیاں اور چٹانیں گرآنے کی بھی پیشگوئی کی تھی۔ انہوںنے کہا کہ اگر چہ وادی میں کسی بڑے سیلاب کا کوئی خطرہ نہیں ہے لوگ افواہوں پر کان نہ دھریں ،تاہم لوگوں کو احتیاط بھرتنا چاہیے ۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ