گرفتاری کے 22 ماہ بعد ماں اور بیوی سے جادھو کی ملاقات

Kulbhushan-Jadhav-image-by-aakashtimes

پاکستان کے قائداعظم محمدعلی جناح کی سالگرہ ہے کے موقع پر کرائی گئی ملاقات کو پاکستان انسانیت کانام دے رہاہے

نئی دہلی ،25 دسمبر: پاکستان کی جیل میں قید سابق ہندوستانی بحریہ کے افسر کلبھوشن جادھو نے آج اپنی بیوی اور ماں سے ملاقات کی ۔یہ ملاقات تقریبا 35منٹ رہی ،22مہینے بعد ہوئی ملاقات بھی پاکستانی حکام نے شیشے کے اس پار سے کرائی ۔تفصیلات کے مطابق پاکستان سے اجازت حاصل کرنے کے بعد کلبھوشن جادھو کی بیوی اور ماں ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کے ساتھ پاکستان کے وزارت خارجہ کے دفتر پہنچے جہاں ان کو ملاقات کےلئے35 منٹ کا وقت ملا۔ملاقات کے مقام پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے ۔ وہاں پرپاکستانی رینجرس، انسداددہشت گردی دستہ اور شارپ شوٹروں کو تعینات کیا گیا تھا۔اطراف وجوانب میں میڈیا اور سیکورٹی اہلکار کے علاوہ دیگرلوگوں کو آمدورفت کی اجازت نہیں دی گئی۔ واضح رہے کہ یہ ملاقات ایک طویل انتظار اور مسلسل جہدوجہد کے بعد میسر آئی ہے ۔تقریبا 22ماہ کی طویل کوشش کے بعد آج جادھو نے اپنی والدہ اور اہلیہ سے ملاقات کی۔معلوم ہوکہ سابق ہندستانی بحریہ کے افسرکلبھوشن جادھوجاسوسی کے الزام میں پاکستان کی ایک جیل میں قید ہے اورانھیں جاسوسی کے معاملے میں سزائے موت سنائی گئی ہے،جس پربروقت روک ہے ۔ پاکستان کی فوجی عدالت کی جانب سے جادھو کو سزائے موت سنائے جانے کے بعد بین الاقوامی عدالت میں ہندستان کی اپیل کے بعد فی الحال اس فیصلے پر روک لگادی گئی ہے۔ پاکستان کے قائداعظم محمدعلی جناح کی سالگرہ ہے کے موقع پر کرائی گئی ملاقات کو پاکستان انسانیت کانام دے رہاہے ۔واضح رہے کہ 20 دسمبر کو جادھو کی اہلیہ اور والدہ کو اسلام آباد کے دورے کے لئے ویزا جاری کیا گیا تھا۔گزشتہ سال مارچ میں پاکستان نے جادھو کو گرفتار کیا تھا ۔ اس سال پاکستان کی فوجی عدالت نے 47 سالہ جادھو کو جاسوسی کے الزام میں پھانسی کی سزاسنائی تھی۔ جادھو کو عدالت نے اپنا موقف رکھنے اور ہندوستانی سفیر سے ملنے کی اجازت بھی نہیں دی۔

 

آپ اپنی خبریں،مضامین اورمراسلات aakashtimes0@gmail.com پر ارسال کریں۔۔۔ہم اسے آپ کے نام سے شائع کریں گے۔