پیش گوئی کا دوسرا دن:خشک موسم

سرینگر //محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے دوسرے روز بدھ کو وادی میں بارش تو نہیں ہوئی البتہ دھوپ کھلی ہوئی نکلی تھی۔تاہم سہ پہر کو زور دار آندھی چلی جبکہ منگل اور بدھ کی درمیانی رات قریب پندر منٹ تک سرینگر کے سیول لائنز علاقے میں بارش ہوئی جس سے خشک موسم کا زور قدرے ٹوٹ گیا۔سرینگر میں 2.2ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔وادی کے دوسرے مقامات گلمرگ، سونہ مرگ اور کپوارہ کے اوپری پہاڑوں پر برف کی ہلکی پرت بچھ گئی جس سے خشک سردی کے زور میں کمی آگئی۔محکمہ موسمیات نے 17نومبر تک کم درجے کی بارشوں اور پہاڑوں پر برفباری کی پیش گوئی کر رکھی ہے۔مشتاق الحسن کے مطابق منگل کی رات سیاحتی مقام گلمرگ میں موسم نے بالآخر کروٹ لی جس کے ساتھ ہی تیز آندھی چلنے کا سلسلہ کچھ دیر جاری رہا۔اسکے بعد افروٹ کے پہاڑوں پر تازہ برف باری شروع ہوئی۔دن میں اگرچہ برفباری نہیں ہوئی البتہ شام چار بجے کے بعد برف باری کا سلسلہ دوبارہ شروع ہوا اور ٹنگمرگ میں رک رک بارش ہوئی۔گلمرگ میں درجہ حرارت منفی 3ریکارڈ کیا گیا۔ گلمگ میں اگر چہ صرف0.2ملی میٹر اور بارشیں ریکارڈ کی گئیں تاہم افروٹ کی مضافاتی پہاڑیوں پر بدھ کی صبح8بجے تک قریب3انچ برفباری ہوئی تھی۔غلام نبی رینہ کے مطابق منگل اور بدھ کی درمیانی رات صحت افزا مقام سونہ مرگ ،تھجواس،گمری،نارا ناگ، زوجیلا ،مٹائین،منی مرگ اور پنجترنی میں تازہ برفباری ہوئی جبکہ گگن گیر،کلن اور گنڈکے پہاڑوں پر بھی برفباری ہوئی ۔بیکن ذرائع کے مطابق زوجیلا کے مختلف مقامات پر تازہ برفباری ہونے کے نتیجے میں سڑک پر مٹی کے تودے گر آئے۔اشرف چراغ کے مطابق کپوارہ میں منگل اور بدھ کی درمیانی رات بارشو ں کا سلسلہ شروع ہو ا جو بدھ کی صبح تک وقفے وقفے جاری رہا ۔ضلع کے پہا ڑو ں پر ہلکی برف باری ہوئی ۔ کپوارہ کے مژھل اور زیڈ گلی مژھل پر 2انچ برف ریکارڈ کی گئی ۔ فرکیاں ٹاپ پر بھی 2انچ برف جمع ہوئی تھی۔سادھنا ٹاپ پر ایک انچ برف جمع ہونے کی اطلا ع ہے۔ لیکن چوکی بل کرناہ سڑک پر گا ڑیو ں کی نقل و حمل بلا خلل جاری رہی ۔کرالہ پورہ کیرن اور کلاروس مژھل سڑکو ں پر برف باری کی وجہ سے کئی گھنٹوں تک گا ڑیو ں کی نقل و حمل میں خلل پڑا ۔کپوارہ میں درجہ حرارت 1.3رہا۔ادھر مغل روڑ کو کل شام ٹریفک کی آمد و رفت کے لئے بند کیا گیا۔پوشانہ اور پیر کی گلی میں ہلکی برفباری ہوئی جس کی وجہ سے ٹریفک میں خلل پڑا۔محمد تسکین کے مطابق منگل اور بدھ کی رات پیر پنچال کے پہاڑی سلسلوں پر اس موسم کی پہلی برفباری ہوئی جس میں کھڑی ، ترگام ، مہو منگت ، پوگل پرستان ، نیل ، راجگڑھ ، بانہال ، چنجلو ، نوگام اور جواہر ٹنل شامل ہیں۔ضلع رام بن کے میدانی علاقوں میں بارشوں اور پہاڑوں پر برفباری کا سلسلہ دوبارہ شروع ہوگیا اور یہ سلسلہ بدھ کی شام تک وقفے وقفے سے جاری تھا۔محکمہ موسمیات کے مطابق منگل اور بدھ کی درمیانی شب کے دوران لداخ کا کرگل علاقہ سرد ترین علاقہ رہا جہاں کم سے کم درجہ حرارت منفی5جبکہ لیہہ میں منفی2.7ڈگری سیلشیس تک پہنچ گیا جس کے نتیجے میں وہاں کے لوگوں کو سخت سردیوں کا سامنا ہے۔پہلگام میں رات کا کم سے کم درجہ حرارت منفی1.8،جبکہ قاضی گنڈ میں کم سے کم درجہ حرارت2.1ڈگری سیلشیس رہا ۔