بی جے پی مرکزی وزیر کا بیٹا اوربھا گلپور فسادات کاملزم ارجت کی ڈرامائی خود سپردگی

ُپٹنہ،یکم اپریل،ہ س:وزیر مملکت برائے صحت و خاندانی بہبود اشونی کمار چوبے کے بیٹے ارجت شاسوت نے گزشتہ رات ڈرامائی طریقے سے یہاں پولس کے سامنے خود سپردگی کردی ۔ پولس نے اتوار کواسے عدالت میں پیش کیا جہاں سے اسے 14دنوں کی عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا۔17مارچ کو ناتھ نگر پولس تھانے میں درج ایف آئی آر کے سلسلے میں بھاگلپور ضلع کی پولس ارجت کو تلاش رہی تھی جبکہ ارجت نے ڈرامائی طریقے سے پٹنہ جنکشن کے نزدیک ہنومان مندر کے باہر ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب پٹنہ ایڈیشنل ایس پی راکیش کمار دوبے کے سامنے خود سپردگی کر دی ۔ بھاگلپور کے انچارج چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ ا ے آر اپادھیائے کے سامنے آج یہاں سخت سیکورٹی کے درمیان ملزم ارجت چوبے کو پیش کیا گیا۔ اس کے بعد جوڈیشل مجسٹریٹ نے ارجت شاسوت چوبے کو چودہ دنوں کی عدالتی حراست میں جیل بھیجنے کا حکم دیا۔
واضح رہے کہ مرکزی وزیر مملکت مسٹر اشونی چوبے کے بیٹے ارجت شاسوت چوبے سمیت 9 لوگوں کے خلاف ضلع بھاگلپور کے ناتھ نگر بازار میں گزشتہ 17 مارچ کو رام نومی کے موقع پر نکالے گئے جلوس کے دوران تشدد بھڑکانے سے متعلق مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ اس کے بعد پولیس کی عرضی پر 24 مارچ اپر چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ اے کے شریواستو کی عدالت نے ان کے خلاف گرفتاری کا وارنٹ جاری کیا تھا۔ارجت کے حامیوں نے اسکی گرفتاری کی خلاف بھاگلپور میں مظاہرہ کیا ورجے شری رامکے نعرے لگائے۔ چونکہ اتوار کی چھٹی تھی اس لئے اسی ایڈیشنل چیف جسٹس مجسٹریٹ اے کے اپادھیائے کی رہائش گاہ پر پیش کیا گیا ۔فی الحال ارجت کوبھاگلپور سینٹرل جیل میں رکھا گیا ہے ۔واضح رہے کہ گزشتہ 17مارچ کو اس نے ہندو نو ورش کے موقع پر ایک جلوس کی قیادت کی تھی ۔ اس پر جلوس میں اشتعال انگیز تقریر کرنے کا بھی الزام تھا جس سے شہر میں فرقہ وارانہ کشیدگی کا ماحول ہو گیا تھا ۔ اس پر بھاگلپور عدالت نے ارجت کے خلاف گرفتاری وارنٹ جاری کیا تھا ۔ ان کے والد اورمرکزی وزیر اشونی چوبے نے اس ایف آئی آر کوردی کاکوڑا قرار دیا تھا اور ایک دوسرے وزیر گری راج سنگھ نے جلوس کے دوران صرف پاکستان مخالف نعرے لگائے جانے کا دعویٰ کیا تھا۔ بعد میں معاملے کے سیاسی رنگ لینے پر اسمبلی میں اپنے خطاب میں وزیر اعلیٰ نتیشکمار نے یہ چیلنج دیا تھاکہ وہ فرقہ وارانہ تشدد کے مسئلے پر سمجھوتہ نہیں کریں گے ۔بھاگلپور کے بعد فرقہ وارانہ کشیدگی سے پانچ اور ضلع متاثر ہوئے جس کے نتیجے میں عوامی اور پرائیویٹ جائیداد کابہت نقصان ہوا ۔ ان معاملوںمیں پولس نے تقریباً250لوگوں کو گرفتار کیا تھا ۔ غور طلب ہے کہ وارنٹ جاری ہونے کے بعد سے ارجت شاسوت فرار تھا۔ اس معاملے میں ارجت کی جانب سے داخل پیشگی ضمانت کی عرضی کو کل ہی عدالت نے مسترد کر دی تھی۔ ضمانت کی عرضی مسترد ہونے کے بعد ارجت شاسوت نے کل دیر رات دارالحکومت پٹنہ کے مہاویر مندر کے نزدیک ڈرامائی انداز میں پولیس کے سامنے خودسپردگی کی تھی۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ

رابطہ:aakashtimes0@gmail.com