ریزرویشن ختم کرنے کی سازش کر رہی ہے مودی سرکار:مانجھی

پٹنہ،08اپریل،ہ س:کبھی بی جے پی کے منظور نظر اور این ڈی اے کے قریبی رہے بہار کے سابق وزیر اعلیٰ جیتن رام مانجھی نے ایک بار پھر بی جے پی کے خلاف محاذ کھول دیا ہے ۔ذرائع کے مطابق بہار کے سابق وزیراعلیٰ اور ہندوستانی عوام مورچہ (ہم)کے قومی صدر جیتن رام مانجھی نے ریزرویشن کے سوال پر مرکز کی نریندر مودی حکومت پر زبردست حملے کئے اور کہا کہ ریزرویشن کو ختم کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔ مانجھی نے آج یہاں تاریخی گاندھی میدان میں پارٹی کی طرف سے منعقد غریب مہا سمیلن میں مرکزی اور بہار حکومت پر زبردست نکتہ چینی کی اور کہا کہ ریزرویشن کو ختم کرنے مسلسل سازش ہورہی ہے۔
انہوں نے مطالبہ کیا کہ مرکز کی مودی حکومت ذات کی بنیاد پر ہوئی مردم شماری کو منظر عام پر لائے اور آبادی کے حساب سے ریزرویشن نافذ کرے اور اگر ضرورت ہوتو اس کے لئے آئین میں ترمیم کی جائے۔جن لوگوں کو ریزرویشن کی بنیاد پر نوکری ملی ہے انہیں ترقی میں بھی ریزرویشن ملے۔ مانجھی نے کہا کہ یہ مہاسمیلن صرف دلتوں کا نہیں ہے بلکہ سبھی ذاتوں اور دھرم اور مذہب سے تعلق رکھنے والے غریبوں کا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب وہ وزیراعلیٰ تھے تو جو 34 فیصلے کئے گئے تھے انہیں نافذ کرانا آج کے پروگرام کا اصل مقصد ہے۔
مسٹر مانجھی نے 2 اپریل کو بھارت بند کے دوران توڑ پھوڑ کے لئے بی جے پی کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہا کہ اگر مرکزی حکومت سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف پہلے ہی نظرثانی کی درخواست دائر کردیتی تو درج فہرست ذاتوں وقبائل کے لوگوں کو سڑک پر نہ اترنا پڑتا۔ انہوں نے مرکز سے ریزرویشن کا کوٹہ بڑھانے اور راجیہ سبھا اور قانون ساز کونسل میں بھی ریزرویشن نافذ کرنے کا مطالبہ کیا۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ

رابطہ:aakashtimes0@gmail.com