گجرات : راج کوٹ میں دلت کا پیٹ پیٹ کرقتل

راج کوٹ کے شاپر انڈسٹریل علاقہ میں ایک کارخانہ کے باہر کچرا چن رہے جوڑے کو بےرحمی سے پیٹا گیا، جس کے بعد شوہر کی موت ہو گئی اور بیوی شدیدطور پر زخمی ہے۔

نئی دہلی،21۔ مئی: ایک دلت آدمی کو راج کوٹ کے شاپر انڈسٹریل علاقہ میں ایک کارخانہ کے باہر کارخانہ کے مالک اور ملازمین کے ذریعے باندھ کر بری طرح سے پیٹا گیا، جس کے بعد اس کی موت ہو گئی۔یہ واقعہ اتوار کی صبح کا ہے۔ احمد آباد مرر کی خبر کے مطابق مرنے والے آدمی کا نام مکیش ساوجی ونیا ہے، جو اپنی بیوی کے ساتھ کچرا چننے کا کام کیا کرتا تھا۔پولیس کے مطابق مکیش اپنی بیوی جیا اور ایک دوسری عورت کے ساتھ راددیا انڈسٹریز کے احاطے میں کچرا چن رہے تھے، جب ان پر حملہ کیا گیا۔
پولیس میںدرج کروائی شکایت کے مطابق، جیا نے بتایا کہ حملہ آوروں نے پہلے دونوں خواتین کو بیلٹ سے مارا، جس کے بعد وہ مدد کے لئے بھاگی۔ اس کے بعد ان لوگوں نے مکیش کو کارخانہ کے دروازے پر باندھ کر بری طرح سے پیٹا۔جب تک خواتین اور لوگوں کے ساتھ لوٹیں، حملہ آور مکیش کو پیٹتے رہے۔ اس کے بعد مکیش کو راج کوٹ سول ہسپتال لے جایا گیا، جہاں اس کی موت کا اعلان کر دیا گیا۔
این ڈی ٹی وی کے مطابق، پولیس نے کارخانہ کے مالک سمیت5 لوگوں کو حراست میں لیا ہے اور ان پر قتل اور ایس سی ایس ٹی ایکٹ کا معاملہ درج کیا ہے۔ راج کوٹ پولیس کے سینئر پولیس افسر شروتی میہتا نے بتایا، ‘ ہم نے کارخانہ کے مالک سمیت 5 لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ ان کے نام ابھی شیئر نہیں کئے جا سکتے کیونکہ ایف آئی آر میں ان کے نام نہیں دئے گئے ہیں۔ ان لوگوں پر قتل اور ایس سی ایس ٹی ایکٹ کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہے، جس کی تفتیش ڈپٹی رینک کے افسر کے ذریعے کی جائےگی۔ ‘
مکیش کو پیٹے جانے کی کوئی واضح وجہ سامنے نہیں آئی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ ان لوگوں کو چوری کرنے کے شک میں پیٹا گیا، لیکن پولیس نے نہ اس بات کی تصدیق کی ہے اور نہ ہی اس سے انکار کیا ہے۔میڈیا میں آئی خبروں کے مطابق مرنے والے کے رشتہ دار پوسٹ مارٹم ہاوس کے سامنے دھرنے پر بیٹھے ہوئے ہیں۔
مکیش کو پیٹے جانے کا ویڈیو سوشل میڈیا پر سامنے آیا ہے، جس میں دو لوگ ان کو بےرحمی سے مارتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔وڑگام سے ایم ایل اے جگنیش میوانی نے اس ویڈیو کو سوشل میڈیا پر شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ یہ اونا میں دلتوں پر ہوئے حملے سے بھی زیادہ خطرناک ہے۔ گجرات دلتوں کے لئے محفوظ نہیں ہے۔ حکومت نے اپنی پچھلی غلطیوں سے کچھ نہیں سیکھا۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ