جامعہ ملیہ کے اے جے کے ایم سی آرسی کو ملا پہلا نمبر

نئی دہلی : آوٹ لک اور انڈیا ٹوڈے میگزین کے مختلف سروے میں جامعہ ملیہ اسلامیہ کے شعبہ ابلاغ عامہ کے اے جے کے ایم سی آر سی ماس کمیونیکیشن ریسرچ سینٹر،آرکی ٹیکچر اینڈ ایکسٹکس ، سوشل ورک اور سینٹر فار ایڈوانس اسٹڈی کو ملک کی یونیورسٹیوں اور کالجوں کے پہلے دس بہترین شعبہ جات میں اول مقام دیا گیا ہے۔
آوٹ لک نے یہ سروے درشٹی اسٹریٹیجک ریسرچ سروسیز کے ساتھ مل سروے میں اے جے کے ایم سی آر سی کو 899 پوائنٹس کے ساتھ پہلے نمبر پر رکھا ہے۔ انڈیا ٹوڈے ایم ڈی آر اے کے سروے میں اسے دوسرا مقام دیا گیا ہے۔
انڈیا ٹوڈے اور آوٹ لک دونوں نے ہی جامعہ ملیہ اسلامیہ کے آرکی ٹیکچر اینڈ ایکسٹکس کو پانچواں مقام دیا ہے۔ آوٹ لک نے گزشتہ سال اس شعبہ کو چھٹا مقام دیا تھا۔
یونیورسٹی کے شعبہ قانون کو آوٹ لک نے چھٹااور انڈیا ٹوڈے نے نواں مقام دیا ہے۔
انڈیا ٹوڈے نے سوشل ورک ڈیپارٹمنٹ کو ملکی پیمانے پر ساتویں نمبر پر جگہ دی ہے۔
پڑھائی کے بعد ذریعہ معاش حاصل کرنے کے معاملے میں انڈیا ٹوڈے نے جامعہ ملیہ اسلامیہ کے آرکی ٹیکچر اینڈ ایکسٹکس کو نمبر ایک پر رکھا ہے۔ اس شعبہ سے پاس ہونے والے طلباءکو اوسطا ساڑھے چار لاکھ روپے سالانہ تنخواہ کی نوکری مل جاتی ہے۔ بہتر ذریعہ معاش حاصل کرنے کے معاملے میں اس شعبہ کو ملک میں تیسرا مقام ملا ہے۔
انڈیا ٹوڈے نے جامعہ ملیہ اسلامیہ کے ڈینٹسٹری شعبہ کو 18 واں مقام دیا ہے۔
جامعہ ملیہ اسلامیہ کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد نے جامعہ کے شعبہ جات کی اس کامیابی پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگر دیگر شعبوں نے بھی اس میں حصہ لیا ہوتا تو جامعہ کا جو معیار ہے اس سے امید تھی کہ ان کا مقام بھی اچھا رہتا ۔

 

آپ ہمیں اپنی ہر طرح کی خبریں،مضامین،مراسلات اور ادبی تحریریں ارسال کریں۔۔۔ہم انھیں آپ کے نام اور فوٹو کے ساتھ www.aakashtimes.com پرشائع کریں گے۔۔۔۔۔۔ادارہ